جرنلسٹ اور میڈیا ویزا

اس صفحہ پر:


عمومی جائزہ

میڈیا (I) ویزا ایک نان امیگرنٹ ویزا ہے جو غیر ملکی میڈیا کے ایسے نمائندوں کے لئے ہے جو اپنے پیشہ میں مشغول ہونے کے لئے عارضی طور پر ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا سفر کرتے ہیں جب کہ ان کا اصل آفس کسی اور ملک میں ہوتاہے۔ امیگریشن قانون کے تحت بعض کارروائیوں اور فیس کا تعلق سفر کرنے والے کے اصل ملک کی پالیسیوں سے ہوتا ہے اور، اس کے نتیجہ میں، ریاست ہائے متحدہ امریکہ اسی طرح کی پریکٹس کی پیروی کرتا ہے، جسے ہم "مبادلہ" کہتے ہيں۔ کسی خاص ملک کے غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو ذرائع ابلاغ ویزے فراہم کرنے کی کارروائیوں میں اس بات کو ملاحظہ کیا جاتا ہے کہ آیا ویزا درخواست دہندہ کی اپنی حکومت ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے ذرائع ابلاغ/ صحافت کو اسی طرح کی مراعات عطا کرتی ہے، یا اسی طرح کا برتا‎ؤ کرتی ہے۔

معیار اہلیت

امریکی امیگریشن قانون کی جانب سے طے کردہ بہت ہی مخصوص ضروریات ہیں، جن کا ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے کوالیفائی کرنے کے لئے درخواست دہندگان کے ذریعہ پورا کیا جانا ضروری ہے۔ ذرائع ابلاغ (I) ویزا کے لئے کوالیفائی کرنے کے لئے درخواست دہندگان کو اس بات کا مظاہرہ کرنا ضروری ہے کہ وہ ذرا‏ئع ابلاغ ویزا جاری کئے جانے کے لئے پورے طور سے اہل ہیں۔

ذرائع ابلاغ ویزے پریس، ریڈیو، فلم یا پرنٹ صنعتوں کے ارکان سمیت "غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں" کے لئے ہیں، جن کی سرگرمیاں غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے کام کے لئے ضروری ہیں، جیسے نامہ نگار، فلم کے عملے، مدیر اور اس طرح کے پیشے کے افراد، جو کہ امریکی امیگریشن قوانین کے تحت، اپنے پیشہ میں مشغول ہونے کے لئے ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا سفر کر رہے ہوں۔ درخواست دہندہ کا ذرائع ابلاغ کی ایسی تنظیم کی اہلیت کی سرگرمیوں میں شامل ہونا ضروری ہے جس کا اصل آفس دوسرے ملک میں ہو۔ ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے اہل ہونے کے لئے، سرگرمی کا بنیادی طور پر معلوماتی، اور عام طور پر خبریں جمع کرنے، حقیقی حالیہ واقعات کے سلسلے میں رپورٹنگ سے منسلک ہونا ضروری ہے۔ قونصلر افسر اس بات کا تعین کرے گا کہ آیا کوئی سرگرمی ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے کوالیفائی کرتی ہے یا نہیں۔ کھیلوں سے متعلق واقعات کی رپورٹنگ عام طور سے ذرا‏ئع ابلاغ ویزا کے لئے مناسب ہے۔ دوسری مثالوں میں، ذرائع ابلاغ سے تعلق رکھنے والی درج ذیل قسم کی سرگرمیاں شامل ہيں، لیکن یہ ان ہی تک محدود نہیں ہیں:

  • غیر ملکی معلوماتی ذرائع ابلاغ کے بنیادی ملازمین جو خبر واقعہ یا دستاویز کی تصویر کشی کرنے میں مصروف ہوں۔
  • ذرا‏ئع ابلاغ کے ممبران جو فلم کی پیداوار یا تقسیم میں مصروف ہوں، وہ ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے صرف اسی صورت میں اہل ہوں گے جب فلمائے جارہے مادے کو معلومات یا اخبار کو پھیلانے کے لئے استعمال کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ، بنیادی ذریعہ اور فنڈنگ کی تقسیم ریاست ہائے متحدہ امریکہ سے باہر ہونی چاہئے۔
  • وہ صحافی حضرات جو معاہدے کے تحت کام کر رہے ہوں۔ کسی پیشہ ور صحافتی تنظیم کی جانب سے جاری کردہ سند کے حامل افراد، اگر وہ ایسی مصنوعات پر معاہدہ کے تحت کام کر رہے ہوں جسے بیرون ملک کسی معلوماتی یا ثقافتی ذریعہ کی جانب سے استعمال کیا جائے گا جس کا مقصد معلومات یا اخبار پھیلانا ہو نہ کہ بنیادی طور پر تجارتی تفریح یا اشتہار بازی۔ برائے مہربانی یہ یاد رکھیں کہ ایک درست ملازمت معاہدہ درکار ہے۔
  • آزاد پیداوار کمپنیوں کے ملازمین جب وہ ملازمین کسی پیشہ ور صحافتی ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری کردہ سند کے حامل ہوں۔
  • غیر ملکی صحافی حضرات جو کسی امریکی نیٹ ورک، اخبار یا دوسرے ذرائع ابلاغ کی بیرون ملک برانچ آفس یا ماتحت ادارے کے لئے کام کر رہے ہوں اگر صحافی ریاست ہائے متحدہ اس لئے جا رہا ہو تاکہ وہ غیر ملکی سامعین کے سامنے صرف امریکی واقعات کی رپورٹنگ کرے۔
  • سیاح بیورو کے سند یافتہ نمائندے، جو مکمل طور پر یا جزوی طور پر کسی غیر ملکی حکومت کے ذریعہ کنٹرول کیا جاتا ہو، یا ان کی مدد کی جاتی ہو، جو بنیادی طور سے اس ملک کے بارے میں حقائق پر مبنی سیاحتی معلومات پھیلاتے ہوں، اور جو کہ A-2 ویزا درجہ کے حقدار نہ ہوں۔
  • تکنیکی صنعتی معلومات۔ ایسی تنظیموں کے امریکی آفسوں کے ملازمین، جو تکنیکی صنعتی معلومات فراہم کرتی ہوں۔

آزاد پیشہ صحافی حضرات کو ایک I ویزا دینے کے لئے صرف اسی وقت زیر غور کیا جائے گا جب درج ذیل معیار کو پورا کیا جائے۔ صحافی کے لئے درج ذیل چیزیں لازمی ہیں:

  • وہ کسی پیشہ ور صحافتی تنظیم کی جانب سے جاری کردہ ایک سند کا حامل ہو
  • ذرائع ابلاغ کی کسی تنظيم کے معاہدہ کے تحت ہو
  • وہ معلومات یا اخبار پھیلا‏ئے اور اس کا مقصد بنیادی طور پر تجارتی تفریح یا اشتہار بازی نہ ہو۔

فوٹو گراف لینے کے مقصد سے B-1 ویزے کے ساتھ ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں داخل ہونے کی فوٹوگرافروں کو بھی اجازت ہے، بشرطیکہ وہ کسی امریکی ذریعہ سے کوئی آمدنی حاصل نہ کریں۔

پابندیاں

ویزا ویور پروگرام میں شریک ملک کے باشندے، جو غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے نمائندے کے طور پر عارضی طور سے ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں داخل ہونا چاہتے ہیں جب کہ وہ ذرائع ابلاغ یا صحافی کے طور پر اپنے پیشہ میں مشغول ہوں، ان کے لئے سب سے پہلے ضروری ہے کہ وہ ریاست ہائے متحدہ امریکہ آنے کے لئے ایک ذرائع ابلاغ ویزا حاصل کریں۔ وہ ویزا ویور پروگرام کے ویزا کے بغیر سفر نہیں کر سکتے ہیں، اور نہ ہی زائر (B قسم) ویزا پر سفر کر سکتے ہيں۔ ایسا کرنے کی کوشش محکمہ برائے ہوم لینڈ سیکورٹی، کسٹمز اور بارڈر پروٹیکشن کے افسر کے ذریعہ داخلہ کی بندرگاہ پر ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں داخل ہونے سے روک دئے جانے کا سبب بن سکتی ہے۔ ذیل میں مذکور فہرست ان حالات کو بیان کرتی ہے جب ایک زائر ویزا یا ویزا ویور پروگرم کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔

زائر ویزا کے ساتھ سفر کرنا

زائر ویزا کا استعمال کیا جا سکتا ہے اگر سفر کرنے کا آپ کا مقصد درج ذیل سرگرمیوں کے لئے ہے:

کسی کانفرنس یا میٹنگ میں شریک ہونا

ذرائع ابلاغ کے وہ نمائندے جو ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا سفر بطور مشارک کے کانفرنسوں یا میٹنگوں میں شریک ہونے کے لئے کر رہے ہوں اور جو کہ میٹنگ کے بارے میں رپورٹنگ نہیں کریں گے، خواہ ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں رہتے ہوئے یا اپنی واپسی پر، وہ زائر ویزا پر سفر کر سکتے ہيں۔ امیگریشن قانون میں فرق یہ ہے کہ آیا وہ "اپنے پیشہ میں مشغول" ہوں گے۔

وہ مہمان جو خطاب کر رہا ہو، یا لیکچر دے رہا ہو، یا تعلیمی سرگرمی میں مشغول ہو

ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے لئے ایک زائر ویزا کا حامل ہونا ضروری ہے جب وہ کسی متعلق یا ملحق غیر منافع بخش ادارہ، یا غیر منافع بخش ریسرچ تنظیم، یا حکومتی ریسرچ تنظیم، یا اعلی تعلیم کے ایسے انسٹی ٹیوشن جہاں سے درخواست دہندہ وظیفہ حاصل کرے گا، میں خطاب کرنے، لیکچر دینے یا عام تعلیمی سرگرمی میں مشغول رہنے کے مقاصد کے لئے ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا سفر کر رہے ہوں۔ تاہم، خطابی سرگرمی ایک واحد انسٹی ٹیوشن میں نو دنوں سے زیادہ تک نہیں چلنی چاہئے اور خطاب کرنے والے شخص نے گزشتہ چھ مہینوں میں اس طرح کی سرگرمیوں کے لئے پانچ سے زیادہ انسٹی ٹیوش یا تنظیموں سے تنخواہ حاصل نہ کی ہو۔

ذرا‏ئع ابلاغ کے آلات خریدنا

امریکی ذرائع ابلاغ کے آلات یا حق نشریات خریدنے یا غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے آلات یا حق نشریات کا آرڈر لینے کے لئے غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے ملازمین کے ذریعہ زائر ویزا کا استعمال کیا جا سکتا ہے، کیوں کہ یہ سرگرمیاں معمولی تجارتی سیاحوں کے ذریعہ انجام دی جانے والی سرگرمیوں کے دائرۂ کار میں ہی آتی ہیں۔

تعطیل

کوئی غیر ملکی میڈیا صحافی زائر ویزا کا استعمال کرتے ہوئے ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں تعطیلات گزار سکتا ہے اور اسے ذرائع ابلاغ ویزا کی ضرورت نہیں ہے جب تک کہ وہ اخباری اہمیت کے حامل واقعات کی رپورٹنگ نہ کرے۔

عارضی کام کے ویزا کے ساتھ سفر کرنا

بعض سرگرمیاں واضح طور سے ذرا‏ئع ابلاغ کے لئے کوالیفائی کر لیتی ہیں کیوں کہ وہ مواد کے اعتبار سے معلوماتی اور خبریں جمع کرنے سے متعلق ہوتی ہیں، جبکہ بہت ساری کوالیفائی نہیں کر پاتیں۔ ہر درخواست پر اس کے مخصوص معاملہ کے پورے مضمون کے اندر غور کیا جاتا ہے۔ قونصلر افسر اس بات پر توجہ مرکوز کرتا ہے کہ آیا سفر کا مقصد بنیادی طور سے معلوماتی ہے، اور آیا یہ عام طور سے خبریں جمع کرنے کی کارروائی سے منسلک ہے، تاکہ وہ اس بات کا تعین کر سکے کہ آیا ایک درخواست دہندہ ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے اہل ہے۔ ذیل میں مذکور فہرست میں ان حالات کو بیان کیا گیا ہے جب Iقسم کے صحافی/ ذرائع ابلاغ ویزا کی بجائے ایک عارضی ملازم ویزا جیسے H، O یا P قسموں کی ضرورت ہوتی ہے۔

ایک عارضی کام کا ویزا کا استعمال کیا جا سکتا ہے اگر سفر کرنے کا آپ کا مقصد درج ذیل مقاصد کے لئے ہو:

تجارتی تفریح یا تشہیری مقاصد کے لئے مادہ کی فلم بندی کرنا

ذرا‏ئع ابلاغ ویزا کا استعمال ایسے درخواست دہندگان کے ذریعہ نہیں کیا جا سکتا ہے جن کے ریاست ہائے متحدہ امریکہ کی طرف سفر کرنے کا مقصد فلم بندی کرنا، یا کسی فلم میں کام کرنا ہو، اور بنیادی طور سے ان کا مقصد تجارتی تفریح یا تشہیر ہو۔ ایک عارضی ملازم ویزا درکار ہے۔

پیداوار حمایت کے کردار جیسے پروف ریڈرز، لائبریرین اور سیٹ ڈیزائنرز

منسلکہ سرگرمیوں میں شامل لوگ جیسے پروف ریڈرز، لائبریرین، سیٹ ڈیزائنرز، وغیرہ ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے اہل نہیں ہیں اور کسی دوسرے زمرہ جیسے H، O یا P ویزے کے تحت کوالیفائی کر سکتے ہيں۔

وہ کہانیاں جو گھڑے گئے واقعات، ٹیلی ویژن اور کوئز شو پر مبنی ہوں

وہ کہانیاں جو موضوع اور گھڑے ہوئے واقعات پر مشتمل ہوں، اگرچہ وہ اس وقت نہ لکھی گئی ہوں، جیسے حقیقی ٹیلی ویژن پروگرام اور کوئز پروگرام، بنیادی طور سے معلوماتی نہیں ہوتے ہیں اور عام طور سے صحافت میں شامل نہیں ہوتے ہیں۔ اسی طرح، وہ دستاویزی فلمیں جو اداکاروں کے ساتھ موضوع تفریحات پر مشتمل ہوتی ہیں، بھی معلوماتی نہیں سمجھی جاتیں۔ اس طرح کے پروڈکشن پر کام کر رہی ٹیم کے ارکان ذرا‏ئع ابلاغ ویزا کے لئے کوالیفائی نہیں کریں گے۔ ٹیلی ویژن، ریڈیو، اور فلم بنانے والی کمپنیاں موجودہ پروجیکٹ کے مطابق مخصوص مشورہ کے لئے امیگریشن اٹارنی کی جانب سے ماہر وکیل تلاش کرنے کی خواہش کر سکتی ہیں۔

فنکارانہ میڈیا مواد تیار کرنا

ذرا‏ئع ابلاغ کے نمائندے جو فنکارانہ میڈیا مواد پروڈکشن (جس میں اداکاروں کا استعمال کیا جاتا ہے) میں شرکت کرنے کے لئے ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا سفر کریں گے، ذرائع ابلاغ ویزا کے لئے کوالیفائی نہیں کریں گے۔ ٹیلی ویژن، ریڈیو، اور فلم بنانے والی کمپنیاں موجودہ پروجیکٹ کے مطابق مخصوص مشورہ کے لئے امیگریشن اٹارنی کی جانب سے ماہر وکیل تلاش کرنے کی خواہش کر سکتی ہیں۔

منحصرین

وہ شریک حیات یا 21 سال سے کم عمر کے غیر شادی شدہ بچے جو ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں اصل ویزا کے مالک شخص کے قیام کی مدت تک اس کے ساتھ رہنا یا شریک ہونا چاہتے ہيں، ان کے لئے مشتق I ویزے درکار ہیں۔ شریک حیات اور/ یا بچے جن کا ارادہ اصل ویزا کے مالک شخص کے ساتھ ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں رہائش اختیار کرنے کا نہیں ہے، لیکن صرف چھٹیوں میں دورہ کرنے کی خواہش رکھتے ہوں، زائر (B-2) ویزے کے لئے درخواست دینے کے اہل ہو سکتے ہیں۔

شریک حیات اور منحصرین مشتقI ویزا پر ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں کام نہیں کر سکتے ہیں۔ اگر شریک حیات/ بچہ کو ملازمت کی تلاش ہے، تو مناسب کام ویزا درکار ہے۔

درخواست سے متعلق اشیاء

I ویزا کی درخواست دینے کے لئے، آپ کو درج ذیل چیزیں جمع کرنا لازمی ہیں:

  • ایک نان امیگرنٹ ویزا الیکٹرانک درخواست (DS-160) فارم۔ DS-160 کے بارے میں مزید معلومات کے لئے DS-160 کا ویب صفحہ دیکھیں۔
  • ایک پاسپورٹ جو ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا سفر کرنے کے لئے درست ہو جس کی درستگی کی تاریخ ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں قیام کی آپ کی مقصودہ مدت کے بعد کم از کم چھ مہینے ہو (جب تک کہ ملک کے مخصوص معاہدے استثناءات فراہم نہ کریں)۔ اگر آپ کے پاسپورٹ میں ایک سے زیادہ شخص شامل ہے، تو ہر اس شخص کو جو ویزا حاصل کرنا چاہتا ہو، درخواست جمع کرنا لازمی ہے۔
  • ایک 2"x2" (5cmx5cm) فوٹوگراف جو گزشتہ چھ ماہ کے اندر لیا گیا ہو۔ فوٹو کی شکل کے تعلق سے اس ویب صفحہ میں مزید معلومات ہیں۔
  • ایک رسید جس میں مقامی کرنسی میں ادا کی گئی 160 امریکی ڈالر کی ناقابل واپسی نان امیگرنٹ ویزا درخواست کارروائی فیس کا ذکر ہو۔ اس فیس کی ادائیگی کے تعلق سے اس ویب صفحہ میں مزید معلوما ت ہیں۔ اگر ایک ویزا جاری کیا جاتا ہے، تو ویزا جاری کرنے کی ایک اضافی مبادلہ فیس بھی ہو سکتی ہے جس کا انحصار آپ کی قومیت پر ہے۔ محکمۂ خارجہ کی ویب سائٹ اس بات کا پتہ لگانے میں آپ کی مدد کر سکتی ہے کہ آیا آپ کو ویزا جاری کرنے کی مبادلہ فیس ادا کرنا لازمی ہے اور فیس کی رقم کیا ہے۔
  • ملازمت کا ثبوت:
    • اسٹاف صحافی: آپ کے آجر کی جانب سے ایک خط جس میں آپ کا نام، کمپنی کے اندر آپ کی پوزیشن، اور ریاست ہائے متحدہ میں آپ کے قیام کا مقصد اور اس کی طوالت کا ذکر ہو۔
    • ذرائع ابلاغ کی تنظیم سے معاہدے کے تحت آزاد پیشہ صحافی: ذرائع ابلاغ کی تنظیم کے ساتھ معاہدہ کی ایک نقل جس میں آپ کا نام، کمپنی کے اندر آپ کی پوزیشن، معاہدہ کی مدت، اور ریاست ہائے متحدہ میں آپ کے قیام کا مقصد اور اس کی طوالت کا ذکر ہو۔
    • میڈیا فلم کے عملے: آپ کے آجر کی جانب سے ایک خط جس میں آپ کا نام، کمپنی کے اندر آپ کی پوزیشن، فلمائے جا رہے پروگرام کا ٹائٹل اور اس کا مختصر تعارف، اور ریاست ہائے متحدہ میں آپ کے قیام کا مقصد اور اس کی طوالت کا ذکر ہو۔
    • ذرائع ابلاغ کی تنظیم سے معاہدے کے تحت آزاد پروڈکشن کمپنی: کام انجام دے رہی تنظیم کی جانب سے خط جس میں آپ کا نام، فلمائے جا رہے پروگرام کا ٹائٹل اور اس کا مختصر تعارف، معاہدہ کی مدت، اور ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں فلم بندی کے لئے درکار وقت کی مدت کا ذکر ہو۔

ان اشیاء کے علاوہ، آپ کے لئے انٹرویو اپوائنٹمنٹ خط پیش کرنا لازمی ہے جو اس بات کی تصدیک کرے کہ آپ نے اس سروس کے ذریعہ ایک اپوائنٹمنٹ محفوظ کی ہے۔ آپ ان تائیدی دستاویزات کو بھی لا سکتے ہیں جو آپ کے خیال میں قونصلر افسر کو دی گئی معلومات میں تعاون کرتے ہیں۔

درخواست کیسے دیں

مرحلہ 1

نان امیگرنٹ ویزا الیکٹرانک درخواست (DS-160) فارم کو مکمل کریں۔

مرحلہ 2

ویزا درخواست فیس کی ادائیگی کریں۔

مرحلہ 3

اس ویب صفحہ پر اپنی اپوائنٹمنٹ مقرر کریں۔ اپنی اپوائنٹمنٹ مقرر کرنے کے لئے آپ کو درج ذیل معلومات کی ضرورت ہوگی:

  • آپ کا پاسپورٹ نمبر
  • آپ کی ویزا فیس رسید کا رسید نمبر۔ (اگر آپ کو اس نمبر کا پتہ لگانے میں مدد کی ضرورت ہے تو یہاں کلک کریں۔)
  • آپ کے DS-160 تصدیقی صفحہ میں مذکور دس (10) عددی بارکوڈ نمبر
مرحلہ 4

اپنے ویزا انٹریو کی تاریخ اور وقت پر امریکی سفارت خانہ یا قونصل خانہ کا دورہ کریں۔ آپ کے لئے اپنے اپوائنٹمنٹ خظ کی پرنٹ کی ہوئی نقل، اپنے DS-160 تصدیقی صفحہ، گزشتہ چھ مہینوں کے اندر لیا گیا ایک فوٹوگراف، اپنا موجودہ اور پرانا پاسپورٹ، اور ویزا فیس ادائیگی کی اصل رسید لانا ضروری ہے۔ ان تمام چیزوں کے بغیر درخواستیں قابل قبول نہیں ہوں گی۔

تائیدی دستاویزات

تائیدی دستاویزات ہی بہت سارے عناصر میں سے ایک ایسا عنصر ہے جس کو قونصلر افسر آپ کے انٹرویو میں ملاحظہ کرے گا۔ قونصلر افسران فرداً فرداً ہر درخواست پر نظر ڈالتے ہیں اور فیصلہ کے دوران پیشہ ورانہ، سماجی، ثقافتی اور دوسرے عوامل کو ملاحظہ کرتے ہیں۔ قونصل افسران آپ کے مخصوص ارادوں، کنبہ کی حالت، اور آپ کے رہائشی ملک کے اندر آپ کے لمبے منصوبے اور امکانات پر نظر ڈال سکتے ہیں۔ ہر معاملہ کی جانچ فرداً فرداًکی جاتی ہے اور ہر اعتبار قانون کے تحت کیا جاتا ہے۔

احتیاط: غلط دستاویزات پیش نہ کریںدھوکہ دہی یا غلط بیانی کی وجہ سے ویزا کے لئے دائمی طور پر نااہل قرار دیا جاسکتا ہے۔ اگر رازداری کی وجہ سے تشویش ہے، تو آپ کو یاد رہے کہ یوایس سفارت خانہ یا قونصل خانہ آپ کی حقیقی معلومات کسی کو فراہم نہیں کراتا اور آپ کی معلومات کی رازداری کا احترام کرتا ہے۔

آپ کو اپنے انٹرویو میں درج ذیل دستاویزات لانے چاہئیں:

  • پریس کارڈ/ اسناد
  • آپ کے آجر کی جانب سے ایک خط جو آپ کے سفر کے مقصد، آپ کے قیام کی مقصودہ طوالت، ان سالوں کی تعداد جن میں آپ اپنے آجر کے ساتھ رہے ہیں اور صحافت کے میدان میں آپ کے تجرباتی سالوں کی تعداد کی جانب اشارہ کرتا ہو۔

منحصرین کے لئے تائیدی دستاویزات

اگر بعد کی تاریخ میں آپ کی شریک حیات اور/ یا بچہ ویزا کے لئے درخواست دے، تو آپ کے ذرائع ابلاغ ویزا کی ایک نقل کا درخواست کے ساتھ پیش کرنا لازمی ہے۔

مزید معلومات

صحافیوں اور ذرائع ابلاغ کارکنان کے لئے ویزے کے تعلق سے مزید معلومات کے لئے، محکمۂ خارجہ کی ویب سائٹ دیکھیں۔